News-17-May-2017-1

پالیسی اور قانون ساز امن کیلئے ڈاکٹر طاہر القادری کے متبادل بیانیہ کا مطالعہ کریں : مرکزی صدر یوتھ لیگ

Published : 17th May, 2017

لاہور(16 مئی 2017)پاکستان عوامی تحریک یوتھ لیگ کے مرکزی صدر مظہر محمود علوی نے کہا ہے کہ کالعدم ٹی ٹی پی ترجمان احسان اللہ احسان کے انکشافات لمحہ فکریہ ہیں ،انہوں نے انکشاف کیا ہے کہ نوجوان اور کم عمر لڑکے آسانی کے ساتھ خودکش بمبار بننے کیلئے تیار ہو جاتے ہیں،مرکزی صدر یوتھ لیگ نے کہا کہ یوتھ کی امن مہم کو صرف پنجاب میں پولیس کی مزاحمت اور برے سلوک کا سامنا ہے دیگر صوبوں کی انتظامیہ کارویہ دوستانہ ہے، 14 مئی کو ڈی پی او قصور اور ڈیرہ غازی خان نے ہماری یوتھ کو امن کیمپ نہیں لگانے دئیے۔ انہوں نے گزشتہ روز مرکزی سیکرٹریٹ میں عہدیداروں اور اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نسداد دہشتگردی اور اعتدال پسند معاشرے کے قیام کیلئے متبادل بیانیہ ضروری ہے، نوجوانوں کو دہشت گردوں کی گمراہ فکر سے بچانے کیلئے ملک کے چپے چپے میں جانا ہو گا ،انہوں نے کہا کہ سربراہ عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری کے تشکیل دئیے گئے متبادل بیانیہ کو نوجوانوں میں عام کرنے کی ضرورت ہے تاکہ یوتھ کو نظریاتی و فکری دہشتگردحملوں سے بچایا جا سکے اور نوجوانوں کو اسلام کی انسانیت کے احترام پر مبنی تعلیمات اور انسانی جان کی حرمت کے بارے میں بتانا دینی اور قومی فریضہ ہے انہوں نے کہا کہ 21 مئی کو پاکستان کے تمام بڑے شہروں میں ضرب امن دستخطی کیمپ لگائے جائینگے، یہ کیمپ ’’Say to no Terrorism‘‘کے عنوان سے قائم لگے گیں جائینگے تاکہ قیام امن کیلئے نوجوانوں کے کردار کو اجاگر کیا جا سکے اور نوجوانوں کو دہشت گردی کے خلاف اس مہم میں عملی طور پر شریک کیا جا سکے۔مظہر محمود علوی نے کہا کہ ڈاکٹر طاہرا لقادری نے دہشتگردی کے خاتمے اور فروغ امن کیلئے عظیم قومی اسلامی و بین الاقوامی تحقیقاتی کام کیا ہے اگر پالیسی ساز اور قانون ساز حلقے خلوص نیت کے ساتھ اس تحقیقاتی کام سے استفادہ کریں تو پاکستان میں یقینی طور پر امن قائم ہو گا اور دہشتگردی کی باطل فکر ہمیشہ ہمیشہ کیلئے شکست سے ہمکنار ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ عوامی تحریک اور اس کے کارکن بالخصوص یوتھ نے آپریشن ضرب عضب اور قومی ایکشن پلان کا بھی خیر مقدم کیا تھا اور ہم آپریشن ردالفساد کی کامیابی کیلئے دعا گو ہیں ،نام اور راستہ کوئی بھی ہو لیکن وہ ہونا دہشتگردی کے100فیصد خاتمے اور قیام امن کیلئے چاہیے۔