News-15-Mar-2017-6

مسیحی اور ہندو رہنماوں کا مرکزی سیکرٹریٹ کا دورہ ، رہنماؤں کو ڈاکٹر طاہر القادری کی تصنیف بطور تحفہ پیش کی گئی

Published : 16th Mar, 2017

لاہور(15 مارچ 2017)مسیحی رہنما ڈاکٹر جیمز چنن نے کہا ہے کہ منہاج القرآن کی تقریبات میں قائداعظم کا پاکستان نظر آتا ہے، غیر مسلم بیٹیوں کی شادیاں منہاج القرآن کی قابل فخر اور قابل تقلید انسانی خدمت ہے۔ منہاج ویلفیئر کے زیر اہتمام اجتماعی شادیوں کی تقریب میں غیر مسلم جوڑوں کی شرکت ،بین المذاہب رواداری اور ہم آہنگی کی اعلیٰ مثال ہے۔ ہر سال مسلم جوڑوں کے علاوہ ہندو اور مسیحی غریب خاندانوں کی بے سہارا بچیوں کی مسلم جوڑوں کے ہمراہ شادیاں اسلامی بھائی چارہ کیے فروغ کا عظیم عملی مظاہرہ ہے جس پر ہم منہاج القرآن کے بانی و سرپرست ڈاکٹر محمد طاہر القادری اور ان کے جملہ عہدیداران کے مشکور ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ریورنڈ سیموئل ،ریورنڈ جوزف جان، ڈاکٹر منوہر چاند ،پنڈت بھگت لال،پنڈت وجے کمار اور ارون کمار کے ہمراہ منہاج القرآن کے مرکزی سیکرٹریٹ کے دورہ کے موقع پر ڈائریکٹر انٹر فیتھ ریلیشنز سہیل احمد رضا سے ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ہندو رہنما پنڈت بھگت لال نے کہا کہ پچھلے سال 2016ء میں ہونے والی شادیوں کی اجتماعی تقریب میں ہندو خاندان کی بیٹیوں کو بھی باوقار انداز سے رخصت کیا گیا ۔ یہ عمل پورے معاشرے کے لیے باعث تقلید ہے یہی پیغمبر اسلام ﷺ کی تعلیمات اور بانی پاکستان کا سیاسی ویژن ہے۔ اس طرح کی فلاحی سرگرمیوں سے بین المذاہب رواداری کو فروغ مل رہا ہے۔ سہیل احمد رضا نے رہنماؤں کو بتایا کہ اس سال 19 مارچ(اتوار) کو ہونے والی شادیوں کی اجتماعی تقریب میں بھی دو مسیحی جوڑے رشتہ ازدواج میں بندھیں گے۔ تحریک منہاج القرآن شب و روز دکھی انسانیت کی خدمت میں مصروف عمل ہے۔ سہیل رضا نے ہندو رہنماؤں کو ڈاکٹر طاہر القادری کی تصنیف ’’اسلام میں انسانی حقوق ‘‘ تحفے میں دی اور کہا کہ ڈاکٹر طاہر القادری نفرتوں کے خاتمے کیلئے انسانیت کو فکری، علمی اور عملی رہنمائی دے رہے ہیں۔ ان کی بین المذاہب ہم آہنگی کیلئے کاوشیں تاریخی ہیں۔ سہیل رضا نے وفد کو بتایا کہ اسلام دین محبت ہے اور بنیادی انسانی حقوق کا محافظ اور علمبردار ہے۔