News-06-Jun-2017-1

عوامی تحریک کی سنٹرل ورکنگ کونسل کا ہنگامی اجلاس، باقر نجفی کمیشن رپورٹ پبلک کی جائے : ڈاکٹر حسن محی الدین قادری کا مطالبہ

Published : 6th Jun, 2017

لاہور(5 جون 2017)پاکستان عوامی تحریک کے سینئر مرکزی رہنما چیئرمین سپریم کونسل ڈاکٹر حسن محی الدین نے سنٹرل ورکنگ کونسل کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کی سینکڑوں خون آلود تصویروں پر آنکھیں بند رکھنے والے قاتل حکمرانوں کو ٹھنڈے کمرے کی ایک تصویر نے انسانی حقوق یاد دلا دیے، سی ڈبلیو سی کے اجلاس میں پانامہ لیکس کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی کی مفصل رپورٹ سے قبل جسٹس باقر نجفی جوڈیشل کمیشن کی مرتب شدہ رپورٹ پبلک کرنے کا مطالبہ کیا گیا، اجلاس میں لندن دہشتگردی کی شدید الفاظ میں مذمت کی گئی،اجلاس میں ایک قرارداد کے ذریعے بدترین لوڈشیڈنگ اور اشیائے خورد ونوش کی بے قابو ہوتی قیمتوں کو حکومت کی ناکامی قرار دیتے ہوئے اس کی شدید الفاظ میں مذمت کی ،اجلاس میں بریگیڈیئر (ر) محمد اقبال، جی ایم ملک، سیدا لطاف حسین شاہ، مرکزی سیکرٹری اطلاعات نوراللہ صدیقی، ساجد بھٹی، جواد حامد، مرتضیٰ علوی، نعیم الدین چودھری ایڈووکیٹ، فرح ناز،شہزاد رسول، حافظ غلام فرید، یوتھ لیگ اور ایم ایس ایم کے رہنماؤں نے شرکت کی ۔سنٹرل ورکنگ کونسل کے اجلاس کے بعد بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان نوراللہ صدیقی نے کہا کہ سرکاری تنخواہ اور عوام کے خون پسینے کے ٹیکسوں کی کمائی سے مراعات لینے والی مریم اورنگزیب ایک خاندان کی ذاتی نوکر بنی ہوئی ہیں، مریم اورنگزیب سانحہ ماڈل ٹاؤن کی شہیدہ شازیہ مرتضی اور تنزیلہ امجد کی تصاویر دیکھیں جنہیں 17 جون 2014 ء کے دن مرد اہلکاروں نے قریب سے چہروں پر گولیاں برسا کر شہیدکیا اور موجودہ حکمرانوں کی ’’نازی فورس‘‘نے باریش بزرگوں کے سروں پر ڈنڈے برسائے اور ان کی ہڈیاں توڑیں اور 100 لوگوں کو خون میں نہلایا، مریم اورنگزیب یہ تصاویر بھی دیکھیں۔سیاسی کارکنوں کا جینا محال کرنے والے حکمران قانون ،اخلاقیات، جمہوری روایات اور انسانی حقوق کی باتیں کرتے اچھے نہیں لگتے۔انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن کے میگا سکینڈلز میں زیر تفتیش حکومتی ٹولہ ریلیف کیلئے غیر ملکی آقاؤں کی طرف دیکھ رہا ہے۔