News-05-July-2017-1

شریف برادران کی گردن کا سریا کیسے نکلے گا ؟؟؟ ڈاکٹر طاہر القادری نے سب بتادیا

Published : Jul 5th, 2017

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے قوم کو ایک نئے راز سے آگاہ کردیا۔کہتے ہیں نواز شریف کو عالمی مہرے ایک مخصوص ایجنڈے کے ساتھ اقتدار میں لائے وہ بال بھی بیکا نہیں ہونے دینگے۔ عالمی سازش ہونے کے بیانات مذاق ہیں۔ پاناما کیس کی تفتیش اور چیخیں مصنوعی اور سکرپٹ کے مطابق ہیں۔ نواز شریف اقتدار میں آئے نہیں لائے گئے ہیں۔ اس میں ہمسایوں اور 7 سمندر پار کے دوستوں کی ہیوی انویسٹمنٹ شامل ہے،قوم تصویر کے اس رخ کو ذہنوں سے اوجھل نہ ہونے دے۔ جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ پبلک ہونے اور استغاثہ کیس کا حصہ بننے سے شریف برادران کی بولتی بند اوران کی گردنوں کے سریے نکلیں گے۔ ریاست نے 14 شہریوں کو قتل کیا اور نظام عدل قاتلوں کو تحفظ دے رہا ہے۔ ابھی ظلم کی سیاہ رات اپنے عروج پر ہے۔ تبدیلی کے عمل کی نشاندہی کرنے والی علامات فی الحال نظر نہیں آرہیں۔ ہماری نظر شہدائے ماڈل ٹاؤن کے انصاف پر ہے۔ اسی انصاف سے 21 کروڑ عوام پر انصاف کے بند دروازے کھلیں گے۔ ہماری اطلاع کے مطابق پنجاب حکومت ،پولیس اور پراسیکیوشن نے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے ایک اور اشتہاری کو ضمانت کی ’’ضمانت‘‘ دے دی ہے ۔ ایس پی سلیمان پولیس کی ایف آئی آر اور پولیس کی جے آئی ٹی کی روشنی میں سانحہ ماڈل ٹاؤن کے کیس میں اشتہاری قرار پائے ۔اب 3سال کے بعد اس اشتہاری کو ضمانت بھی ملے گی اور پرکشش تقرری بھی ۔شہریوں کے قتل عام کے بعد انصاف کا قتل عام جاری ہے۔ ہمارا انصاف کے آئینی محافظوں سے سوال ہے کہ کیا قتل کیس کے ہر اشتہاری کو یہی پروٹوکول ملتا ہے جو سانحہ ماڈل ٹاؤن کیس کے اشتہاری ایس پی سلیمان کو مل رہا ہے ؟ڈاکٹر طاہر القادری نے مزید کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن کے نامزد قاتل آج بھی حکومت میں ہیں اور اپنے اثرورسوخ کے باعث شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء کو انصاف ملنے نہیں دے رہے؟سانحہ ماڈل ٹاؤن استغاثہ کیس کی انسداد دہشتگردی کی عدالت میں مزید سماعت 3اگست کو ہوگی، ججز کو چھٹیاں ہونے کے باعث لمبی تاریخ پڑی۔