News - 9 Sep - 2017 - 1

وزیر خارجہ نے چینی ہم عصر سے برما ایشو پر بات نہ کر کے بے حسی دکھائی ،بزدل ،کاسہ لیس حکمران امت مسلمہ کیلئے بولنے کی جرأت نہیں رکھتے : ڈاکٹر طاہر القادری

Published : Sep 9, 2017

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے کہا ہے کہ بزدل ،کاسہ لیس ۔حکمران امت مسلمہ کیلئے بولنے کی جرأت نہیں رکھتے ۔وزیر خارجہ نے دورہ چین کے موقع پر برما کے اہم فریق سے اہم انسانی المیہ پر کوئی بات نہ کر کے بے حسی کا مظاہرہ کیا۔ پاکستان ہزاروں مسلمان بھائیوں کے قتل عام اور جبری ہجرت بے دخلی خود کو لاتعلق نہیں رکھ سکتا ہے ؟۔ایک قرارداد پاس کر کے حکومت اپنی ذمہ داریوں سے بری الذمہ نہیں ہو سکتی۔ عوامی تحریک اور تحریک منہاج القرآن کے کارکنوں نے پاکستان کے ہر چھوٹے بڑے شہر میں برمی مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کر کے ثابت کیا ہے کہ امت مسلمہ جسد واحد کی طرح ہے اور ہم برمی مسلمانوں کے ساتھ ہونیوالے انسانیت سوز مظالم کی تکلیف کو اپنے جسم میں محسوس کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ برما میں ریاستی جبر و تشدد اور قتل و غارت گری پر کب تک خاموش رہے گی؟ برمی مسلمانوں کے حق میں آواز بلند کرنا امت مسلمہ کے ہر شہری پر واجب ہے اور اسلامی حکومتیں برما کے اندر محصور مسلمانوں کی فور مدد نہیں کر سکتیں تو ہجرت کر کے آنے والے ہزاروں روہنگیا مسلمانوں کی بحالی کیلئے وسائل مختص کریں، ترک حکومت نے مہاجرین کے کیمپوں میں خوراک کی فراہمی یقینی بنا کر قابل تقلید مثال قائم کی ہے۔منہاج القرآن واحد انٹرنیشنل تحریک ہے جس کے کارکنان و عہدیداران نے عید الضحیٰ برما کے مظلوم مسلمانوں کے ساتھ مہاجر کیمپوں میں گزاری۔گوشت تقسیم کیا اور انہیں تحائف بھی دئیے ۔انہوں نے کہا کہ ہم اپنی مدد آپ کے تحت مدد کا یہ سلسلہ جاری رکھیں گے ۔منہاج ویلفیئر فاؤنڈیشن یوکے کو ضروری ہدایات دے دی ہیں۔ڈاکٹر طاہر القادری نے لاہور،کراچی،کوئٹہ،پشاور،ملتان،فیصل آباد،سکھر،بہاولپور،کوٹلی،مظفر آباد،سیالکوٹ،گوجرانوالا،ڈی جی خان،لاڑکانہ سمیت 114بڑے شہروں اور86 شہروں اور قصبات میں برمی مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کیلئے شاندار ریلیاں نکالنے پر عہدیداروں ،کارکنان اور ریلیوں میں شریک سول سوسائٹی کے نمائندوں ،علمائے کرام کو بطور خاص مبارکباد دی۔