News Dec 23, 2017 - 1

قاتل اعلیٰ کے دباؤ پر ہوم سیکرٹری کا سانحہ ماڈل ٹاؤن جے آئی ٹیز کی نقول فراہم کرنے سے انکار

Published :Dec 23, 2017

قاتل اعلیٰ کے دباؤ پر ہوم سیکرٹری نے  سانحہ ماڈل ٹاؤن جے آئی ٹیز کی نقول فراہم کرنے سے انکار کردیا ہے۔پاکستان عوامی تحریک کے وکلاء نے ڈاکٹر طاہرالقادری  کو آگاہ  کیا  کہ ہوم سیکرٹری کوپنجاب حکومت کی طرف سے بنائی جانے والی دونوں جے آئی ٹیز کی مصدقہ کاپیاں لینے کی درخواست دی گئی تھی  مگر ہوم سیکرٹری نے بے بسی کا اظہار کرتے ہوئے مصدقہ نقول فراہم کرنے سے انکار کر دیا اور عدالت جانے کا مشورہ دیا۔ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری نے کہا کہ ہوم سیکرٹری اور دیگر افسران قاتل اعلیٰ پنجاب کے زیر اثر اور دباؤ میں ہیں جو حکمران ہمیں کاغذات دینے کیلئے تیار نہیں وہ انصاف کیسے ہونے دینگے؟ اسی لیے کہتے ہیں کہ قاتلوں کے استعفے ناگزیر ہیں۔ ہمارا مطالبہ ہے کہ انصاف کی فراہمی کیلئے سانحہ ماڈل ٹاؤن کے نامزد ملزمان کو عہدوں سے ہٹایا جائے یہ جب تک عہدوں پر رہیں گے فیئر تفتیش ہو سکے گی اور نہ فیئر ٹرائل کا حق ملے گا۔پورا نظام انہوں نے اپنی جکڑ میں لے رکھا ہے۔پراسیکیوشن کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ قاتلوں کی بجائے مظلوموں کے ساتھ کھڑی ہو۔ ڈاکٹر طاہرالقادری نے کہا کہ چند دنوں کی بات ہے آج نہیں تو کل انہیں عہدوں سے ہٹنا ہے اور پورے سچ نے سامنے آنا ہے، بہت سے لوگ سچ اگلنے کیلئے بے تاب ہیں ۔شریف خاندان نے عدلیہ کے خلاف اعلان جنگ کر رکھا ہے جو ریاست کے خلاف اعلان بغاوت ہے، بار اور بنچ کو اشرافیہ کے اس اعلان بغاوت کا نوٹس لینا چاہیے ،بار اور بنچ دونوں آئین اور عدلیہ کے انسٹیٹیوشن کے کسٹوڈین ہیں۔نواز شریف سادہ لوح عوام کو اپنے عدلیہ مخالف ایجنڈے کا حصہ بنانے کیلئے لوٹی گئی دولت پانی کی طرح بہارہے ہیں ۔