green pakistan Pic

گرین پاکستان ، کلین پاکستان مہم منہاج القرآن سیکرٹریٹ میں پودے لگا نے کی تقریب

مہم ماہ اگست تک جاری رہے گی، جتنی جھنڈیاں اتنے پودے لگائے جائیں: خرم نواز گنڈا پور
درخت کاٹنے کے عمل کو دہشتگردی قرار دیا جائے تنظیمات شجر کاری مہم میں حصہ لیں: سیکرٹری جنرل PAT
آزادی کے مہینے میں ہر پاکستانی اپنے حصے کا ایک پودا ضرور لگائے: حافظ غلام فرید

 

 

تحریک منہاج القرآن لاہوراور پاکستان عوامی تحریک کے زیر اہتمام ’’گرین پاکستان، کلین پاکستان‘‘ مہم کے سلسلے میں مرکزی سیکرٹریٹ ماڈل ٹاؤن میں پودے لگائے گئے، سیکرٹری جنرل عوامی تحریک خرم نواز گنڈاپور، تحریک منہاج القرآن لاہور کے امیر حافظ غلام فرید، ثناء اللہ خان، رانا تجمل، یونس نوشاہی و دیگر رہنماؤں نے پودے لگائے، مہم ماہ اگست تک جاری رہے گی، لاہور سمیت پورے ملک میں 10 لاکھ سے زائد نئے درخت لگائے جائینگے، 14اگست یوم آزادی پر جتنی جھنڈیاں اتنے پودے لگانے کی مہم کے سلسلے میں ’’گرین پاکستان، کلین پاکستان ‘‘ کے عنوان سے لاہور سمیت دیگر شہروں میں سیمینارز، کانفرنسز، واک کے ذریعے آگاہی مہم بھی شروع کی جا چکی ہے،سکول، کالجز اور یونیورسٹیز کے طلباء طالبات اساتذہ کو بھی اس مہم کا حصہ بنایا گیا ہے،سیکرٹری جنرل عوامی تحریک خرم نوازگنڈاپور نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہر پاکستانی آزادی کے اس مہینے میں کم از کم ایک پودا لگا کر ملک کو سرسبز اور شاداب بنانے میں اپنا کردار ادا کرے، لاہور سمیت پورے ملک میں برسوں سے شجرکاری مہم جاری ہے، مرکزی و صوبائی حکمران اور ضلعی انتظامیہ موسم بہار میں پودے لگا کر شجر کاری مہم کا آغاز کرتے ہیں، تحصیل سے لے کر ڈویژن سطح تک تمام سرکاری دفاتر میں اربوں روپے کے پودے لگائے جاتے ہیں لیکن پودے لگانے کی رسم مکمل کرنے کے بعد ان پودوں کی حفاظت نہ کرنے کی وجہ سے کبھی بھی مطلوبہ نتائج حاصل نہیں ہو سکے، انہوں نے کہا کہ جتنے درخت لگائے گئے اگر ان میں سے 20فیصد بھی برقرار رہتے تو آج ملک کا موسم اور ہوتا، افسوس کروڑوں روپے کے پودے لگانے کے باوجود درختوں کا رقبہ بڑھنے کی بجائے روزبروز کم ہورہا ہے، ماحول اور موسم بہتر بنانے کیلئے ملک کا 25فیصد حصہ جنگلات پر مشتمل ہونا چاہیے مگر اربوں روپے سالانہ خرچ کرنے کے باوجود پاکستان میں جنگل صرف 4فیصد کے قریب ہیں، انہوں نے کہا کہ اس ناکامی کا سبب کرپشن اور متعلقہ محکموں کی عدم دلچسپی ہے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ بلا ضرورت درخت کاٹنے پر پابندی لگائی جائے اور اس عمل کو دہشتگردی قرار دیتے ہوئے سخت ترین سزا مقرر کی جائے، انہوں نے مزید کہا کہ درخت قدرت کا انمول تحفہ ہیں جنگلات اور شجر کاری کی اہمیت کو اجاگر کرنے کیلئے موثر آگاہی مہم کی اشد ضرورت ہے، اس حوالے سے تحریک منہاج القرآن اپناعملی کردار ادا کرے گی تاکہ قدرت کے انمول تحفے کو بچایاجا سکے، منہاج القرآن لاہور عوامی بیداری شعور مہم شروع کرے گی جس میں نئے درخت لگانے کے ساتھ ساتھ موجودہ درختوں کی کٹائی سے بھی مکمل گریز کرنے کی درخواست کی جائیگی، انہوں نے کہا کہ صحت مند درخت پر کلہاڑی چلانا خود اپنے ہی پاؤں پر کلہاڑی چلانے کے مترادف ہے، تحریک منہاج القرآن71واں یوم آزادی اس نعرے کے ساتھ منا رہی ہے کہ ’’جتنی جھنڈیاں لگائیں اتنے ہی درخت لگائیں‘‘ ۔امیر تحریک منہاج القرآن لاہور حافظ غلام فرید نے کہا کہ درخت لگانا جس قدر اہم ہے اس سے زیادہ اہم اس کی حفاظت کرنا ہے،نرم ونازک پودوں کو اپنی جڑوں کی مضبوطی کیلئے وقت درکار ہوتا ہے ،اگر ہم زیادہ سے زیادہ درخت لگائیں اور پھر انکی دیکھ بھال بھی پوری ذمہ داری سے کریں تو کوئی وجہ نہیں کہ پاکستان میں جنگلات کے رقبے میں اضافے کے ساتھ ساتھ ماحول اور موسم میں بھی بہتری آ جائیگی۔ حکمرانوں کے نام نہاد ترقیاتی منصوبوں کے نام پر ملک بھر میں لاکھوں کی تعداد میں درخت کاٹے گئے ۔ آزادی کے مہینے میں ہر شخص کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اپنے حصہ کا پودا لگائے۔