2

نفرت کے پرچار سے انتہا پسندوں کے امن اور انسانیت دشمن بیانیے کو تقویت ملے گی: ڈاکٹر طاہر القادری

ڈیڑھ ارب مسلمانوں کے مذہبی جذبات مجروح کرنا آزادی اظہار نہیں: ڈاکٹر طاہر القادری
مقدس ہستیوں کی توہین سے بچا کھچا امن بھی برباد ہو گا ،پیغمبر اسلام ﷺ امن و محبت کے داعی تھے
بارود کی بو سے اٹی فضاؤں کو امن،محبت اور عالمی بھائی چارے کی خوشبو سے بدلا جائے: سربراہ عوامی تحریک
منہاج القرآن کے بانی و سرپرست ڈاکٹر محمد طاہر القادری کے ہاتھ پر امریکی نوجوان نے اسلام قبول کیا

 

 

پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے توہین آمیز خاکوں کے مقابلوں کی خبروں پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اسے بین الاقوامی بھائی چارے اور امن کے خلاف ایک مذموم اقدام قرار دیا اور کہا کہ انسانی حقوق کا احترام یہ ہے کہ مقدس ہستیوں،مذاہب، عبادت گاہوں،عقائد اور روایات کا احترام کیا جائے اور دنیا کو کسی نئے تصادم کی طرف جانے سے روکا جائے۔خاکوں جیسے مذموم فعل کے ذریعے دنیا بھر کے مسلمانوں میں تشویش اور اشتعال بڑھ رہا ہے اسے فی الفور روکا جائے۔ڈیڑھ ارب مسلمانوں کے مذہبی جذبات مجروح کرنا انسانی حقوق اور مسلمہ بین الاقوامی قوانین اوراقدار کی نفی ہے۔نفرت پھیلانے سے دنیا کا بچا کھچا امن بھی برباد ہو گا اور اس سے انتہا پسندوں کے انسانیت دشمن بیانیے کو تقویت ملے گی۔ گزشتہ روز انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پر انہوں نے اپنے بیان میں کہاکہ مذہبی مقدس ہستیوں کے خلاف نفرت انگیزی ہر گز ہر گزآزادی اظہار نہیں ہے،اس وقت دنیا جنگ کے دہانے پر ہے،تہذیبوں کے کسی نئے تصادم کو روکنا ہو گا،اس حوالے سے اقوام متحدہ ،یورپی یونین اور او آئی سی کو کلیدی کردار ادا کرنا چاہیے ۔انہوں نے کہاکہ بارود کی بو سے اٹی فضاؤں کو امن،محبت اور عالمی بھائی چارے کی خوشبو سے بدلا جائے اور مزید خون بہنے سے روکا جائے۔پیغمبر اسلام امن ،محبت کے داعی اور پوری دنیا کیلئے سراپا رحمت بنا کر بھیجے گئے ۔پیغمبر اسلام ﷺ نے بین المذاہب ہم آہنگی اور رواداری کی تعلیم دی۔ انہوں نے کہا کہ مغربی حکومتیں عالم اسلام کے مذہبی جذبات و عقائد کا احترام یقینی بنانے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔دریں اثناء امریکہ،ڈیلاس میں ایک امریکی نوجوان سی جے ہومی نے تحریک منہاج القرآن کے بانی و سرپرست ڈاکٹر طاہر القادری کے ہاتھ پر اسلام قبول کیا،قبول اسلام کے بعد ڈاکٹر محمد طاہر القادری نے نوجوان کو مبارکباد دی اور انکی بنیادی تعلیم و تربیت کے حوالے سے تحریک منہاج القرآن کے سکالرز کو اقدامات کرنے کی ہدایت دی ۔امریکی نوجوان نے قبول اسلام کے بعد اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ میں نے اسلامی لٹریچر کا مطالعہ کیا اسلام محبت،پیار،حقوق و فرائض،رواداری،میانہ روی اور صلہ رحمی کا دین اور ضابطہ حیات ہے،اسلام کی سچی تعلیمات پر عمل کرنے والا کبھی نفرت کا پرچار نہیں کرسکتا ۔انہوں نے اسلام کی روشنی سے بہرہ مند کرنے پر منہاج القرآن کے سکالرز کا شکریہ ادا کیا۔